aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

ہر بت یہاں ٹوٹے ہوئے پتھر کی طرح ہے

اختر امام رضوی

ہر بت یہاں ٹوٹے ہوئے پتھر کی طرح ہے

اختر امام رضوی

MORE BYاختر امام رضوی

    ہر بت یہاں ٹوٹے ہوئے پتھر کی طرح ہے

    یہ شہر تو اجڑے ہوئے مندر کی طرح ہے

    میں تشنۂ دیدار کہ جھونکا ہوں ہوا کا

    وہ جھیل میں اترے ہوئے منظر کی طرح ہے

    کم ظرف زمانے کی حقارت کا گلہ کیا

    میں خوش ہوں مرا پیار سمندر کی طرح ہے

    اس چرخ کی تقدیس کبھی رات کو دیکھو

    یہ قبر پہ پھیلی ہوئی چادر کی طرح ہے

    میں سنگ تہ آب کی صورت ہوں جہاں میں

    اور وقت بھی سوئے ہوئے ساگر کی طرح ہے

    روتے ہیں بگولے مرے دامن سے لپٹ کر

    صحرا بھی طبیعت میں مرے گھر کی طرح ہے

    اشعار مرے درد کی خیرات ہیں اخترؔ

    اک شخص یہ کہتا تھا کہ غم زر کی طرح ہے

    مأخذ:

    Funoon(Jadeed Ghazal Number: Volume-002) (Pg. 1025)

      • اشاعت: 1969
      • ناشر: احمد ندیم قاسمی
      • سن اشاعت: 1969

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے