aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

اظہر عباس

غزل 15

اشعار 10

ہنسی مذاق کی باتیں یہیں پہ ختم ہوئیں

اب اس کے بعد کہانی رلانے والی ہے

تو کہانی کے بدلتے ہوئے منظر کو سمجھ

خون روتے ہوئے کردار کی جانب مت دیکھ

جو رکاوٹ تھی ہماری راہ کی

راستہ نکلا اسی دیوار سے

اکیلا میں ہی نہیں جا رہا ہوں بستی سے

یہ روشنی بھی مرے ساتھ جانے والی ہے

یوں تو ہر ایک شخص کا اپنا ہی شور ہے

لیکن کسی سے کوئی یہاں بولتا نہیں

کتاب 1

 

Recitation

Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

GET YOUR PASS
بولیے