aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

دل وہ پیاسا ہے کہ دریا کا تماشا دیکھے

اختر امام رضوی

دل وہ پیاسا ہے کہ دریا کا تماشا دیکھے

اختر امام رضوی

MORE BYاختر امام رضوی

    دل وہ پیاسا ہے کہ دریا کا تماشا دیکھے

    اور پھر لہر نہ دیکھے کف دریا دیکھے

    میں ہر اک حال میں تھا گردش دوراں کا امیں

    جس نے دنیا نہیں دیکھی مرا چہرہ دیکھے

    اب بھی آتی ہے تری یاد پہ اس کرب کے ساتھ

    ٹوٹتی نیند میں جیسے کوئی سپنا دیکھے

    رنگ کی آنچ میں جلتا ہوا خوشبو کا بدن

    آنکھ اس پھول کی تصویر میں کیا کیا دیکھے

    کوئی چوٹی نہیں اب تو مرے قد سے آگے

    یہ زمانہ تو ابھی اور بھی اونچا دیکھے

    پھر وہی دھند میں لپٹا ہوا پیکر ہوگا

    کون بے کار میں اٹھتا ہوا پردہ دیکھے

    ایک احساس ندامت سے لرز اٹھتا ہوں

    جب رم موج مری وسعت صحرا دیکھے

    مأخذ:

    Pakistani Adab (Pg. 299)

    • مصنف: Dr. Rashid Amjad
      • اشاعت: 2009
      • ناشر: Pakistan Academy of Letters, Islambad, Pakistan
      • سن اشاعت: 2009

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے