Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

قسمت میں اگر جدائیاں ہیں

صابر ظفر

قسمت میں اگر جدائیاں ہیں

صابر ظفر

MORE BYصابر ظفر

    قسمت میں اگر جدائیاں ہیں

    پھر کیوں تری یادیں آئیاں ہیں

    یاں جینے کی صورتیں ہیں جتنی

    وہ صورتیں سب پرائیاں ہیں

    فریاد کناں نہیں بس اک میں

    چاروں ہی طرف دہائیاں ہیں

    ہر درجے پہ عشق کر کے دیکھا

    ہر درجے میں بے وفائیاں ہیں

    اک تیرا برا کبھی نہ چاہا

    گو ہم میں بہت برائیاں ہیں

    تقریب وصال یار ہے کیا

    کوچے میں ترے صفائیاں ہیں

    اس نے بھی کسر کوئی کوئی چھوڑی

    ہم نے بھی بہت سنائیاں ہیں

    اب اور کہیں کا رخ کریں آپ

    اس جگ میں تو جگ ہنسائیاں ہیں

    کیسے کریں بندگی ظفرؔ واں

    بندوں کی جہاں خدائیاں ہیں

    مأخذ :
    • کتاب : Mazhab e Ishq (Pg. 492)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے